ایسا ٹوئٹ جو کروڑوں میں فروخت ہوا

نیو یارک (نیوز ڈیسک) سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر کے شریک بانی اور سی ای او جیک ڈورسی کی پہلی ٹوئٹ کروڑوں روپے میں خریدی گئی ہے، یہ خریداری ایک نیلامی کے دوران کی گئی۔

خبر رساں ایجنسی کے مطابق ٹوئٹ خریدنے والے شخص نے اس ٹوئٹ کی قیمت 31 کروڑ 40 لاکھ روپے ادا کی۔ ٹوئٹر کے شریک بانی نے گذشتہ جمعہ کو “ویلیوایبلز سینٹ ” نامی ٹوئٹس کی آن لائن مارکیٹ میں لنک پوسٹ کیا تھا۔

خبر کے مطابق نیلامی کے دوران جو ٹوئٹ فروخت کی گئی اس میں جیک ڈورسی نے 21 مارچ 2006 کو صرف یہ لکھا تھا کہ میں نے ابھی اپنا ٹوئٹراکاؤنٹ بنایا ہے۔

اس سائٹ کے مطابق یہاں پر سرمایہ کار اور کولیکٹرز ٹوئٹ کے تخلیق کردہ دستخطوں کے ساتھ ٹوئٹس کی خرید و فروخت کرسکتے ہیں۔

جیک ڈورسی کی ٹوئٹ کی سب سے زیادہ 31 کروڑ 40 لاکھ روپے کی بولی جسٹن سن نے لگائی، جسٹن سن کرپٹو کرنسی کے پلیٹ فارم ٹرون کے بانی ہیں۔

عالمی خبر رساں ایجنسی کے مطابق جسٹن سن بٹ ٹورنٹ نامی اسٹریمنگ ویب سائٹ کو بھی متحرک رکھتے ہیں اور اسکی دیکھ بھال بھی ان ہی کے فرائض میں شامل ہے۔

خبررساں ایجنسی نے ویلیوایبلز کے حوالے سے بتایا ہے کہ ٹوئٹ خریدنے کا مطلب ہے کہ آپ ٹوئٹ کا ایک ڈیجیٹل سرٹیفکیٹ خرید رہے ہیں جو اس لحاظ سے منفرد ہوتا ہے کہ یہ ٹوئٹ کے خالق کی جانب سے تصدیق اور دستخط شدہ ہوتا ہے۔

جیک ڈورسی کی یہ ٹوئٹ سب کو اس وقت تک دکھائی دے گی جب تک وہ اورٹویٹر انتظامیہ اسے آئن لائن رکھیں گے۔

یاد رہے کہ اس سے قبل جسٹن سن نے 2019 میں ارب پتی وارن بفٹ کے ساتھ لنچ کرنے کا موقع 70 کروڑ روپے سے زائد رقم کی نیلامی میں حاصل کیا تھا لیکن وہ انہیں بٹ کوائن کی اہمیت سمجھانے میں ناکام رہے تھے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں