عورت مارچ کے نام پر اسلامی اقدار کی تضحیک کیخلاف سمابیہ طاہر کی جانب سے قرارداد اسمبلی میں جمع

اسلام آباد (نیوز روم) عورت مارچ کے نام پر اسلامی اقدار کی تضحیک کے خلاف قرارداد پنجاب اسمبلی میں جمع کردا دی گئی۔ قرارداد تحریک انصاف کی رکن پنجاب اسمبلی سمابیہ طاہر کی جانب سے جمع کرائی گئی  قراردار کے متن کے مطابق لاہور، اسلام آباد اور کراچی میں 8 مارچ 2021 کو عورت مارچ کے نام پر اسلامی اقدار کی انتہائی گھناؤنے انداز میں تضحیک کی گئی ہے۔ یہ ایوان یہ رائے بھی رکھتا ہے کہ خاتون کی مقدس حیثیت ماں، بہن، بیٹی اور بیوی کی ہے۔

ایک سوچی سمجھی سازش اور غیر ملکی ایجنڈے کے تحت چند خواتین کو آزادی کے نام پر کچھ تنظیمیں اپنے فوائد کے لئے استعمال کر رہی ہیں۔ دین اسلام واحد مذہب ہے جس میں خواتین کے حقوق ان کی عزت، توقیر، مقام، حیثیت اور وقار کا مکمل خیال رکھا گیا ہے۔ یہ ایوان 8مارچ کی آڑ میں ایسی تمام بےحیائی اور خباثتوں کی بھرپور اور شدید الفاظ میں مذمت کرتا ہے۔

جو عریانی اور آزادی کے نام پر ننگا کرنے یا ننگا ہونے کے زمرے میں آتا ہے۔ 8 مارچ2021 کو عورت کی آزادی اور عورت مارچ کی آڑ میں اسلامی اور آئینی حدود کو پامال کرنے والوں کے ساتھ سختی سے نپٹا جائے۔ ایسے تمام خواتین و حضرات جو ملک میں ہیجانی کیفیت پیدا کرکے اپنے مذموم مقاصد کا حل چاہتے ہیں ان کی بیخ کنی کے لیے ان کے خلاف سخت سے سخت قانونی کاروائی عمل میں لائی جائے۔مطالبہ

اپنا تبصرہ بھیجیں