امریکی عوام کی اکثریت نشے سے کیوں بیزار ہے؟

ٹیکساس (نیوز ڈیسک) امریکہ کے الکحل فری بارز میں شراب نوشی ترک کرنے کے رجحان میں اضافہ دیکھنے میں آرہا ہے، عوام کی اکثریت الکحل سے پاک مشروبات سے لطف اندوز ہونا پسند کررہے ہیں۔

امریکی ریاست ٹیکساس میں آسٹن کے سنس بار میں لوگوں کی بڑی تعداد الکحل سے پاک مشروبات نوش کرنے کےلیے آرہی ہے، جہاں عام بارز کی طرح موسیقی اور رنگ برنگی لائٹنگ کا انتظام کیا گیا ہے۔

مذکورہ بار عام بارز کی طرح دکھائی دیتا ہے جہاں چارو طرف مختلف رنگوں اور برانڈز پر مشتمل مشروبات کی بوتلیں رکھی ہیں لیکن یہاں الکحل سے پاک مشروبات ہی فروخت کی جاتی ہیں۔

 بار کے مالک کرس مارشل نے بتایا کہ یہاں آنے والے 75 فیصد افراد الکحل سے پاک مشروبات پینا پسند کرتے ہیں۔  ایک اور کیفے کے  مالک جوشوا جیز نے بتایا کہ الکحل سے پاک مشروبات پینے کی ایک ہزار  وجوہات ہیں جبکہ حاملہ خواتین بھی  الکحل سے پرہیز کرتی ہیں اس کے علاوہ  دیگر کئی وجوہات کی بنا پر بھی لوگ شراب نوشی سے پرہیز کررہے ہیں۔

علاوہ ازیں ایک اور الکحل فری بار کے مالک ڈگلس واٹرس نے کہا کہ آج کل  لوگ سوڈا اور جوس سے اپنی ضروریات پوری کر رہے ہیں اور  الکحل سے پاک مشروبات کا استعمال کرتے ہوئے اپنے شوق کی تکمیل کر رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ یہاں لوگ اپنے پرانے ذوق کی نقل کرتے ہوئے تسکین حاصل کرتے ہیں، وہ الکحل فری مشروبات کو وہیسکی یا شراب کی طرح نوش کر رہے ہیں۔

بار میں آئے ایک گاہک نے بتایا کہ مجھے اب گاڑی چھوڑ کر جانا نہیں پڑے گا اور نہ ہی گھر جانے میں مجھے کوئی پریشانی پیش آئے گی جبکہ صبح مجھے سر میں بھی درد نہیں ہوگا، گاہک نے بتایا کہ نشہ سے دور ہوکر وہ خود کو صحتمند محسوس کر رہے ہیں۔

الکحل فری بارز میں آنے والے لوگوں کا خیال ہے کہ صحتمند زندگی کے لیے نشے سے دور رہنا ضروری ہے۔ اسی طرح 19ویں صدی میں بھی امریکہ میں نشہ سے پاک سماج سے متعلق رحجانات میں اضافہ دیکھا گیا تھا۔

موجودہ ماحول میں امریکی عوام میں شراب سے بیزارگی دیکھی جارہی ہے اور پرسکون زندگی گزارنے کے علاوہ سماجی زندگی میں ان کی دلچسپیاں بھی بڑھ رہی ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں