نیشنل یوتھ ٹیلنٹ کے ایگزیکٹوممبر آرٹسٹ صدام عمر

نیشنل یوتھ ٹیلنٹ کے ایگزیکٹوممبر آرٹسٹ صدام عمر

آز قلم محمّد سہیل

کسی بھی قوم وملک کی کامیابی وناکامی ،فتح و شکست ، ترقی وتنزل اور عروج وزوال میں نوجوانوں کا اہم کردار ہوتا ہے ۔ ہر انقلاب چاہے وہ سیاسی ہو یا اقتصادی ،معاشرتی سطح کا ہویا ملکی سطح کا، سائنسی میدان ہو یا اطلاعاتی ونشریاتی میدان، غرض سبھی میدانوں میں نوجوانوں کا کردار نہایت ہی اہم اور کلیدی ہوتا ہے نوجوانوں کا کردار زندگی کے ہرشعبہ میں نمایاں اور واضح رہا ہے. جہاں نوجوانوں کا مثبت کردار معاشرے میں خوشحالی اور عروج کا سبب بنا وہیں نوجوانوں کے منفی پہلو نے فحاشی اور بدکرداری جیسے عوامل کو فروغ دے کر معاشرہ کو تباہ و برباد کیا۔

آج ہم آپ کو اس پاک سر زمین کے ایک با صلاحیت نوجوان سے متعارف کروا رہے ہیں. جن کا نام سادام عمر ہے. نیشنل یوتھ ٹیلنٹ پاکستان کے ایکزیکٹیو ممبر ہیں،وہ پشاور کے رہائشی ہیں انہیں بچپن ہی سے سکیچنگ کا شوق تھا. صدام عمر کا کہنا تھا کہ انہوں نے اپنے دوستوں کی تصاویر کو کاغذ پر اتارنے سے اغاز کیا کبھی دوستوں سے داد ملی تو کبھی دوستوں کے مزاح کا سامان بنا۔ طالب علم ہونے کہ ناطے انہیں اس چیز کا ادراک تھا کہ اگر انہیں کچھ کرنا ہے نئے طریقے سے کرنا ہوگا

صدام عمر نے سب سے پہلے طاہر خان اور وصال خان (آفیشل) کا سکیچ تیار کرنا شروع کیا۔ اس نوجوان نے اس کام میں سوشل میڈیا کا مثبت پہلو مدنظر رکھتے ہوئے اس کا سہارا بھی لیا اور اپنے اس کام کو کیمرے کی آنکھ میں ریکارڈ کرنا شروع کر دیا۔ پھر صدام عمر نے کئ اکیڈمیز میں آرٹ کے مقابلے میں حصہ بھی لیا اور ایوارڈ حاصل کیا۔ سدام عمر کو ارتغرل ڈرامہ کے مشہور کردار گنگت الپ سے بھی خوب پیزارای ملی۔

وفاقی وزیر علی محمد خان۔۔ ائیر فوس چیف مشال مجاہد انور خان۔۔ (ایم این اے)،چیئرمین اوف پارلیمنٹ آفیسر مجاہد علی نے ان کے کام کی خوب تعریف کی اور ان کی صلاحیتوں کو سراہا۔ اس کے بعد تو ملک بھر کی سیاسی اور غیر سیاسی معروف شخصیات سے انہیں خوب سراہا گیا چاہے پھر وہ (اے این پی) پارٹی کے لیڈر ایمل ولی خان ہوں یا افتخار حسین صدام عمر کی اسی دلچسبی کو دیکھتے ہوئے کنٹری ڈائریکٹر نیشنل یوتھ ٹیلنٹ پاکستان محمد بلال نے کہا کہ صدام عمر جیسا ٹیلنٹٹ نوجوان ہی درحقیقت پاکستان کا مثبت چہرہ ہیں، ضرورت اس امر کی ہے کہ ان کے ٹیلنٹ کی ہر سطح پر پذیرائی کی جائے۔

ذرا نم ہو تو یہ مٹی بڑی زرخیز ہے ساقی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں