خوشی کس چیز کو کہتے ہیں

خوشی کس چیز کو کہتے ہیں

(تحریر حزب اللہ خان (ممبر نیشنل یوتھ ٹیلنٹ

جب کوئی بھی کام انسان کی مرضی کے مطابق ہوتا ہے تو انسان کو سکون یا وه جزبات جو ایسی صورت میں پیدا ہوتے ہیں اسے خوشی کھتے ہیں مثال کے طور پر اگر کسی بچے کی کی مخصوص سکول میں پڑھئے کی خواہش ہو اور وہ خواہش پوری ہوجائے تو اس کی خوشی کی انتہا ہوگئی اور ایک بچہ اسکریم چاہتا ہے اور اس کی والدہ اسی آئسکریم دلا دیتی ہے تو بچہ خوش ہو جاتا ہے یا اگر کسی کی پسند کی شادی ہو جائے گے تو اس کی بھی خوشی کی کوئی انتہا نا ہوگی ۔جب چند چیزیں ہماری مرضی کے مطابق ہوتی ہیں تو ہمیں بہت زیادہ مسرت ہوتی ہے اور جب ہماری خواہشات کی خلاف ہو ہم اداس ہوتی ہیں۔ اب سوال یہ ہے کہ کیا ایسا ہوگا آپ کے سارے کام جو آپ کے مرضی کی مطابق ہوگی نہیں اللہ تعالی فرماتے ہیں جو اللہ کی ولی دوست بن جاتے ہیں ان کی دو خصوصیات ہے یہ کسی چیز سے سوائے اللہ کی نہ ڈریں گے انہیں کبھی غم نہ ہوگا اور خوف ہمیشہ مستقبل بارے میں ہوتا اللّه یہ بتانا چاہتا ہے اگر آپ واقعی اللّه کے ولی ہیں، اللّه کے دوست ہیں، تو پھر پتہ ہونا چاہیئے شاید ہو سکتا ہے جس چیز سے ہم محبت کرتے ہیں جو چیز اپنے لیے اچھی سمجھتے ہوں وہ دراصل ہمارے لئے اچھی نہیں ہو، اور ہو سکتا ہے ہم جس چیز کو برا سمجھتے ہیں وہ ہمارے لئے بری نہ ہو اللّه جانتا ہے ہم نہیں جانتے ۔جس دن انسان فیصلہ کر لیتا ہے اللّه مجھ سے بہتر جانتا ہے تو پھر ہم اپنے مرضی کی بات نہیں کرتے اور علاج کی مرضی کی بات کرتے ہے اس لے صحابہ کرام یہ کہا کرتے تھے جب ہم لوگ دعا مانگتے ہیں ہمارے دعا قبول ہو جاتی ہے تو ہمیں بڑی خوشی ہوتی ہے اور جب ہماری دعا قبول نہیں ہوتی تو ہمیں اور بھی زیادہ خوشی ہوتی ہے کیونکہ کہ پہلے جو مرضی تھی وہ ہماری تھی اب جو ہوگا وہ اللّه کی چاہت سے ہوگا اور يقینا اللّه ہمیں 70 مائوں کے پیار سے بھی بڑھ کر چاہتے ہیں ایسا کسیے ہو سکتا ہے اللّه ہمارے ساتھ وہ معاملہ کریں جو ہمارے لیے اچھا نہیں، تو آپ کو بہت سارے ایسے کام یاد ہوں گے جو اس وقت ہم چا ہتے تھے لیکن اس وقت اللّه نے نہیں کیا۔ بعد میں وہ کام ہمارے لئے زیادہ کارگر ثابت ہوا۔ ہم نے ایسے بہت سارے لوگ دیکھیں ہیں جو کہتے تھے کہ ہم ڈاکٹر بننا چاہتے تھے ہم یہ بننا چاہتے تھے لیکن نہیں بن سکے آج وہ لوگ شکر کرتے ہیں کہ اگر ہم وہ بن جاتے تو ابھی نوکری کر تے ۔ آپ یہ بات جان لیں جو بھی اللہ کا فیصلہ ہوگا وہ ہمارے لیے بہترین فیصلہ ہوگا اس لیے ہر حال میں خوش رہا کریں اللہ تعالی کا شکر بجا لایا کرو

اپنا تبصرہ بھیجیں