وکلا کے منشی یا کلرک عدالت میں پیش ہو کر تاریخ نہیں لے سکیں گے، ہائیکورٹ کا بڑا اقدام

اسلام آباد (نیوز ڈیسک) اسلام آبادہائیکورٹ نے عدالتوں میں تاخیری حربوں سے مقدمات میں التوا ختم کرنے کیلئے بڑا اقدام کیا ہے۔ اسلام آباد ہائیکورٹ نے ماتحت عدالتوں کو خط ارسال کیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ وکیلوں کے منشی یا کلرک سول کورٹ میں پیش ہو کر تاریخ نہیں لے سکیں گے۔

خط میں ہدایت کی گئی ہے کہ وکلا کی جگہ کلرکوں کے پیش ہونے کی پریکٹس ختم کی جائے اور غیر ضروری التوا مانگنے پر ہرجانہ عائد کرنے کے ایکٹ پر بھی عملدرآمد یقینی بنایا جائے۔

ہرجانے کا ایکٹ تاریخ پر تاریخ لینے اور جعلی مقدمات کی حوصلہ شکنی کیلئے لایا گیا تھا جبکہ ایکٹ کے مطابق بلاوجہ تاریخ لینے والے فریق پر ہرجانہ عائد کر کے مخالف فریق کو دیا جا سکتا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں