آصف علی زرداری کا قوم سے ایک اور مزاق، ”حکومت ملی تو پاکستان کو 110 ڈگری بدلوں گا”

اسلام آباد (نیوز ڈیسک) سابق صدر نے لاہور میں بلاول ہاؤس میں پیپلزپارٹی کے عہدیداروں اور کارکنوں سے ملاقات کی۔ ملاقات میں رانا فاروق سعید، ثمینہ گھرکی، اسلم گل، اسرار الحق بٹ، چودھری اشرف، فیصل میر، حاجی عزیز الرحمن چن، افنان صادق بٹ، رانا جمیل منج ،تنویر اشرف کائرہ، علامہ یوسف اعوان، صدر ڈسٹرکٹ تھری عاطف رفیق، امجد جٹ، حافظ غلام محی الدین، انجم بٹ، اشرف بارا، اسلم گڑا، نسیم صابر، مدثر شاکر، مانی پہلوان، صداقت شیروانی، ایڈون سہوترا، روبینہ سہیل بٹ، نادیہ شاہ اور دیگر بھی موجود تھے۔

انہوں نے کہا کہ یہ کہنا پنجاب اور گلگت بلتستان میں پیپلز پارٹی ختم ہو گئی ہے، سفید جھوٹ ہے، ہم نے اپنی سیاست کمزور کر کے پاکستان بچانے کی کوشش کی، انوکھے لاڈلے کی چار سالہ پالیسیوں کے باعث آج مہنگائی ہے، یہ ہماری کب سنتے ہیں، جب ضرورت پڑتی ہے تب سنتے ہیں، کارکنوں کو بحریہ ٹاؤن آنے میں مشکل ہوتی ہے، گلبرگ شفٹ ہو رہا ہوں، پنجاب میں بیٹھنا اور کارکنوں کو عزت دینی ہے۔ لوگوں کو پتہ چلنا چاہیے پیپلز پارٹی کا صدر گلبرگ میں بیٹھا ہے۔ اشرف بارا کو پیپلز پارٹی میں شمولیت پر مبارکباد پیش کرتا ہوں۔

پاکستان پیپلز پارٹی کے شریک چیئر مین اور سابق صدر آصف علی زرداری نے کہا ہے کہ حکومت کرنے کا موقع ملا تو پاکستان کو 110 ڈگری بدلوں گا۔ انہوں نے کہا کہ وعدہ کرتا ہوں انشا اللہ آئندہ حکومت پیپلز پارٹی کی ہوگی، پورا شیئر لیں گے، اب پنجاب میں بیٹھوں گا اور سب سے ملکر کام کروں گا۔