شعبہ آرٹس اینڈ میڈیا (فاؤنڈیشن یونیورسٹی) کے زیر اہتمام میڈیا اور کمیونیکیشن اسٹڈیز 2022 پر پہلی بین الاقوامی کانفرنس کا انعقاد

اسلام آباد (ذوالقرنین قرنی) میڈیا اور کمیونیکیشن اسٹڈیز 2022 پر پہلی بین الاقوامی کانفرنس کا اہتمام شعبہ آرٹس اینڈ میڈیا، فاؤنڈیشن یونیورسٹی اسکول آف سائنس اینڈ ٹیکنالوجی نے کیا۔ میڈیا اور کمیونیکیشن پر پہلی بین الاقوامی کانفرنس کا مقصد مواصلات کے اصولوں کی تشکیل، علمی مواصلات میں اضافہ اور تعلیمی، سماجی، سیاسی اور میڈیا حلقوں سے تعلق رکھنے والے غیر ملکی محققین اور ماہرین تعلیم کے ساتھ ذاتی تعامل کے طریقہ کار کی تشکیل ہے۔

ریکٹر فاونڈیشن یونیورسٹی اسلام آباد، میجر جنرل ناصر دلاور شاہ نے کانفرنس کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ٹیکنالوجی پر مبنی انقلابی دور میں میڈیا اور کمیونیکیشن کی اہمیت کو نظر انداز نہیں کیا جا سکتا۔ دنیا میڈیا کی معلومات پر انحصار کرتی ہے اور اس نے زندگی کے تمام شعبوں اور شعبوں کی حرکیات کو تبدیل کردیا ہے۔

میڈیا سیاسی، جنگ، موسم اور صحت کے سماجی، معاشی، صنفی، مذہب اور انسانی حقوق وغیرہ کے بارے میں معلومات پہنچا کر اپنا تعمیری کردار ادا کرتا ہے تاکہ ان مسائل کی حقیقی تصویر پیش کر کے معاشرے پر اثر انداز ہو کر تعلیم حاصل کی جا سکے۔ کانفرنس کے مہمان خصوصی ڈاکٹر ظفر اقبال، پروفیسر اسلامک یونیورسٹی اسلام آباد نے کہا کہ جدید میڈیا نے معاشرے کے اہم مسائل کو ہر پہلو سے اجاگر کرنے اور حل کرنے کے لیے عوام کو براہ راست حکام سے رابطہ استوار رکھا ہے۔ میڈیا کے کام کاج اور تمام جہتوں میں مواصلات کے بارے میں بصیرت حاصل کرنے کے لیے اس شعبے میں تحقیق ایک لازمی حصہ ہے۔

اختتامی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے پروریکٹر/ڈائریکٹر فاونڈیشن یونیورسٹی ڈاکٹر عبدالغفور نے کہا کہ یہ کانفرنس بین الاقوامی سطح پر پورا اترنے کے لیے میڈیا، کمیونیکیشن، اور صحافت کے معیارات میں عمدگی لانے کا آغاز کرے گی۔ یہ ہمارے محققین کے لیے اسکالرز کے ساتھ نیٹ ورکنگ اور باہمی افہام و تفہیم سے فائدہ اٹھانے کا بہترین موقع ہے۔ اس لیے اس کانفرنس جیسے مواقع بہت اہمیت کے حامل ہیں اور لوگوں اور معاشروں کے درمیان کامیاب انضمام پر اہم مثبت اثرات مرتب کرتے ہیں۔

ڈین سوشل سائنسز ڈاکٹر فضل رحیم خان نے اسکالرز اور معززین کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ یہ کانفرنس میڈیا اور کمیونیکیشن میں تحقیق کی ترقی کے لیے ایک عظیم سرمایہ ہے جس سے پاکستان میں میڈیا اسٹڈیز کی تحقیق اور تدریس کو بہتر بنایا جا سکتا ہے۔ افراد اور معاشرے کے ذریعہ ماس میڈیا کے استعمال اور اثرات، خبروں کی تشکیل میں نئی ٹیکنالوجیز کا استعمال، سوشل میڈیا کے استعمال اور صحافت میں آزادی اظہار، میڈیا کی تعلیم اور میڈیا خواندگی، ثقافتی اور بین الثقافتی رابطے کے مسائل، سیاسی مواصلات۔ . کانفرنس کے اہم موضوعات میں شامل تھے جن پر تیس سے زائد تحقیقی مقالے قومی اور بین الاقوامی سکالرز نے پیش کئے۔

اسلامک یونیورسٹی اسلام آباد، نمل، رفاہ یونیورسٹی اسلام آباد، پنجاب یونیورسٹی لاہور، یونیورسٹی آف مینجمنٹ اینڈ ٹیکنالوجی لاہور، یونیورسٹی آف گجرات، شاہد بینظیر بھٹو یونیورسٹی، سندھ، منہاج یونیورسٹی، لاہور، یونیورسٹی آف مالاکنڈ، یونیورسٹی آف سوات کے سکالرز اور معززین نے شرکت کی۔ آپ ہمارے مہمان مقررین اور ایریزونا اسٹیٹ یونیورسٹی، ریاستہائے متحدہ، برطانیہ، ملائیشیا اور آئرلینڈ سے سکالرز اور محقیقین نے اس تحقیقی کانفرنس میں شرکت کی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں