وہ ایپس جو واٹس ایپ کی جگہ استعمال کی جاسکتی ہیں

اسلام آباد (نیوز ڈیسک) واٹس ایپ رابطوں کے لیے دنیا بھر میں سب سے زیادہ استعمال کی جانے والی اسمارٹ فون ایپ ہے، تاہم اس کے سخت سیکیورٹی فیچرز سے بعض افراد کو تحفظات لاحق ہیں۔ اگر آپ کا شمار بھی ایسے ہی افراد میں ہوتا ہے جو پھر آج آپ کو واٹس ایپ کے متبادل ایپس کے بارے میں بتایا جارہا ہے۔

ٹیلی گرام

واٹس ایپ کے بعد ٹیلی گرام دوسری بڑی مقبول ترین میسجنگ ایپ ہے جس میں وائس، ویڈیو اور ٹیکسٹ چیٹ کے ساتھ مختلف سیکیورٹی آپشنز موجود ہیں۔

سگنل

پرائیویسی کے شعبے میں کوئی بھی ایپ بمشکل ہی سگنل کو شکست دے سکتی ہے کیونکہ یہ صارف کا ڈیٹا جمع نہیں کرتی جبکہ انکرپشن کے ساتھ اضافی آن اسکرین پرائیویسی آپشنز بھی فراہم کرتی ہے۔

فیس بک میسنجر

اس میں وائس، ویڈیو اور ٹیکسٹ میسجنگ کے ساتھ ساتھ اسٹیکرز، جی آئی ایف اور دیگر ایسے متعدد فیچرز دستیاب ہیں جو واٹس ایپ میں بھی موجود ہیں، یہ دونوں ویسے ایک ہی کمپنی کی ایپس ہیں۔

اسکائپ

یہ فل فیچر کمیونیکیشن ایپ ہے جس سے وائس، ویڈیو اور ٹیکسٹ چیٹس کرنا ممکن ہے جبکہ فائلز کا تبادلہ بھی کیا جاسکتا ہے۔ ڈیسک ٹاپ پر اسکائپ میں ویڈیو اور وائس کالز کو ریکارڈ بھی کیا جاسکتا ہے۔

وائبر

یہ موبائل فونز اور لینڈ لائن کالز کے لیے ایک اچھی ایپ ہے جبکہ ٹیکسٹ چیٹس کرنا بھی ممکن ہے، اس میں وائس، ویڈیو اور ٹیکسٹ چیٹ فیچرز موجود ہیں جبکہ اینڈ ٹو اینڈ انکرپشن کا تحفظ بھی فراہم کیا گیا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں