آئی ایم ایف کے پاکستانی حکومت سے نئے مطالبات

اسلام آباد (نیوز ڈیسک) ماہر معاشیات مزمل اسلم نے آئی ایم کے نئے مطالبات کے حوالے سے بتایا کہ پٹرول پر سیلز ٹیکس اور 600 ارب کے نئے ٹیکس مطالبے میں شامل ہیں۔

تفصیلات کے مطابق معاہر معاشیات مزمل اسلم نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ‌ ٹوئٹر پر اپنے بیان میں کہا کہ آئی ایم ایف حکومت پر دباؤ بڑھا رہی ہے، نئے مطالبے میں پٹرول پر سیلز ٹیکس اور 600 ارب کے نئے ٹیکس شامل ہیں۔

اس کی وجہ یہ ہے کہ حکومت کااخراجات پر قابو نہیں ، معیشت سست روی کاشکار ہے جس کی وجہ سے ٹیکس آمدنی میں کمی متوقع ہے۔ خیال رہے پاکستان اور آئی ایم ایف کےدرمیان مذاکرات آئندہ ماہ سے ہوں گے، مذاکرات میں 9 ویں اقتصادی جائزے پر بات چیت ہوگی۔

ذرائع وزارت خزانہ نے کہا کہ پاکستان سے آئی ایم ایف ڈو مور کا مطالبہ کر سکتا ہے، پیٹرولیم مصنوعات پر لیوی کی زیادہ سے زیادہ حد تک پہنچائی جاسکتی ہے۔

وزارت خزانہ نے بتایا کہ پیٹرول پر لیوی 31 دسمبرتک 50 روپے فی لیٹر کرنے اور ڈیزل پر لیوی اپریل 2023 تک 50 روپے فی لیٹر کرنے کا مطالبہ ہوسکتا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں