حکومت اور اس کے اتحادیوں کی کانپیں ٹانگ گئی ہیں اور وہ مکمل طور پر بوکھلاہٹ کا شکار ہیں

اسلام آباد (نیوز ڈیسک) ٹائمز پاکستان نیوز کو انٹرویو دیتے ہوئے پاکستان تحریک انصاف کی وکیل رہنما مسز نائلہ مشتاق احمد دھون ایڈوکیٹ ہائی کورٹ سابقہ فنانس سیکرٹری پپلاں بار ایسوسی ایشن نے کہا ہے کہ عمران خان نے جو نظریہ اور بیانیہ دیا تھا عوام نے اسے من و عن تسلیم کیا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ عوام کا اس آزادی مارچ میں ٹھاٹھیں مارتا سمندر اس بات کی غمازی ہے کہ عوام ان چوروں اور لٹیروں سے اور ان کی باری کی سیاست سے تنگ آ چکی ہے۔ حکومت اور اس کے اتحادیوں کی کانپیں ٹانگ گئی ہیں اور وہ مکمل طور پر بوکھلاہٹ کا شکار ہیں۔

ارشد شریف قتل ہو، عمران خان پر قاتلانہ حملہ ہو یا سینٹر اعظم سواتی کے ساتھ کی جانے والی زیادتی ہو ان تمام کے محرک اس امپورٹڈ حکومت سے جڑے ہوئے ہیں اور عوام ان کی بھونڈی سازشوں اور جھوٹے بیانیے کو سمجھ چکی ہے اور مسترد بھی کرچکی ہے۔

توشہ خانہ کو بنیاد بنا کر چلانے والی بے بنیاد کمپین اس بات کی غمازی ہے کہ عمران خان کی پوری سیاست میں صرف اس چیز کے علاوہ انہیں کچھ نہ ملا اور وہ بھی عوام نے یکسر مسترد کردی۔

انھوں نے مزید  کہا کہ عوام سے پر زور اپیل ہے کہ وہ 26 نومبر کو اپنی آنے والی نسلوں کی بقا اور اس ملک کی بقا کے لیے عمران خان کے ساتھ قدم سے قدم ملا کر چلیں اور ان چور لٹیروں اور باری کی سیاست والوں سے ہمیشہ کے لیے جان چھڑائیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں