نواز شریف سے قبل مریم نواز 29 جنوری کو پاکستان پہنچیں گی، کیپٹن صفدر

راولپنڈی (نیوز ڈیسک) لیگی رہنما کیپٹن (ر) صفدر نے کہا ہے کہ نواز شریف سے پہلے مریم نواز 29 جنوری کو لاہور پہنچیں گی، جہاں ان کا شان دار استقبال کیا جائے گا۔

مقدمے کی سماعت سے قبل  راولپنڈی کچہری میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیپٹن (ر) صفدر کا کہنا تھا کہ جنرل باجوہ کی مداخلت نے ملک سے آٹا ختم کردیا، جنرل مشرف کی مداخلت سے ملک کو ناقابل تلافی نقصان پہنچا اور ججز کی مداخلت نے بھی ملک کو ناقابل تلافی نقصان پہنچایا ۔

انہوں نے کہا کہ جنرل باجوہ اب کسی شادی، تعزیت، تقریب یا بازار جانے کے بھی قابل نہیں رہے۔ جنہوں نے ہماری حکومت کو ڈی ریل کیا، ان پر آرٹیکل 6 لگے گا۔ جن ججوں اور جرنیلوں نے پاکستان کو اس حالت میں پہنچایا، ان سب کو بے نقاب کریں گے۔

کیپٹن صفدر نے کہا کہ کیا جنرل ضیا، مشرف، باجوہ، جنرل فیض نے ٹھیک کیا؟۔جنرل باجوہ اور جنرل فیض حمید کے پس پردہ مارشل لا نے عوام کو آٹے سے محروم کردیا۔ موجودہ ملکی صورت حال کا ذمے دار فیض حمید اور ثاقب نثار ٹولہ ہے۔

انہوں نے کہا کہ ہم عدالتوں کو نشانہ نہیں بنا رہے لیکن آج بھی جسٹس منیر اور جسٹس ارشاد جیسے کردار موجود ہیں۔ ملک کو اس نہج پر پہنچانے والے پاناما کے اندرون خانہ بلیک میلر ججز ہیں۔ عدالتوں نے کبھی ریاست یا سیاست دانوں کو نہیں بلکہ اپنی پنشنوں کو بچایا۔ جسٹس ثاقب نثار گروپ نے سپریم کورٹ کے ججز کو بدنام کیا۔

سابق وزیراعظم نواز شریف کے داماد اور مریم نواز کے شوہر کیپٹن (ر) صفدر کا کہنا تھا کہ مریم نواز واپس آکر پاکستان کے خلاف سازش کرنے والوں کو بے نقاب کریں گی۔ مریم نواز اور نواز شریف کا استقبال فیض حمید اور ثاقب نثاری ٹولے کو بہا کر لے جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ نواز شریف اور مریم نواز دونوں پاکستان آ رہے ہیں۔ مریم نواز کا استقبال، نواز شریف کے استقبال کی ریہرسل ہوگی۔

کیپٹن صفدر کا کہنا تھا کہ مریم نواز 29 جنوری کو شام 4 بجے لاہور ائرپورٹ پہنچیں گی۔ قبل ازیں کیپٹن (ر) صفدر اپنے خلاف کار سرکار میں مداخلت اور ہنگامہ آرائی کے کیس میں تھانہ نیو ٹاؤن میں درج مقدمے  کی سماعت کے لیے سول جج کی عدالت میں پیشی کے لیے راولپنڈی کچہری پہنچے ۔ جہاں عدالت نے سماعت کے بعد فیصلہ محفوظ کرلیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں